اسلام فوبیا کے لفظ پر پابندی عائد کر دی جائے، رحمان ملک

 اسلام فوبیا کے لفظ پر پابندی عائد کر دی جائے، رحمان ملک
پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئیر رہنما اور سابق وزیر داخلہ سینیٹر رحمن ملک کرائسٹ چرچ سانحہ میں شہید ہونے والے ہارون محمود کے گھر پہنچے اور شہید کے بھائی اور والدہ سے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا تعزیتی پیغام بھی پہنچایا، رحمن ملک نے کہاکہ میت کے لانے سمیت کسی قسم کی مدد کی ضرورت ہو…

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رحمن ملک نے کہاکہ اسلام ایک مکمل ضابطہ اخلاق ہے،پوری دنیا سے اپیل ہے کہ اسلام فوبیا کے لفظ پر پابندی عائد کر دی جائے۔

انہوں نے کہاکہ نیوزی لینڈ میں شہید ہونے والے مسلمانوں کا کیا قصور ہے؟دہشتگردی کا کوئی مذہب نہیں ہوتا، جہاں ہو قابل مذمت ہے، وزیراعظم نیوزی لینڈ کے شکر گزار ہیں جنہوں نے مسلمانوں کیساتھ اظہار ہمدردی کی۔

رحمان ملک نے کہا کہ ہارون شہید کا خاندان اگر پاکستان میت لانے کا کہے تو پیپلز پارٹی ضرور تعاون کریں گے ،سیکرٹری خارجہ سمیت تمام حکومتی ذمہ داران کا مکمل تعاون ہے۔

سینیٹر رحمان ملک نے کہاکہ جہادیوں کو افغانستان میں لڑانے کے لیے مغرب نے پیدا کیا، مغرب نے القاعدہ، طالبان اور داعش بنایا، اب خاتمہ خود کرے، کیا دہشت گردی کا صرف مسلمان سامنا کریں گے؟دہشتگرد ہر قوم اور ہر نسل میں موجود ہیں، اسلام کا دہشتگردی کیساتھ کوئی جوڑ نہیں،دہشت گردی کے خلاف سب کو ملکر لڑنا ہے۔ سینیٹر رحمان ملک نے کہاکہ سینیٹ میں قرار داد جمع کرائی ہے دنیا اسلامک فوبیا کا لفظ استعمال نہ کرے،حکومت پورے ملک میں چرچز کی سیکورٹی کو بڑھائے۔

 

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s